اہم

اعجاز عبید ۲۰۰۶ء سے اردو تحریر یعنی یونیکوڈ کو فروغ دینے کی نیت سے اردو کی مفت دینی اور ادبی برقی کتب فراہم کرتے رہے ہیں۔ کچھ ڈومین (250 فری ڈاٹ کام، 4 ٹی ڈاٹ کام ) اب مرحوم ہو چکے، لیکن کتابیں ڈاٹ آئی فاسٹ نیٹ ڈاٹ کام کو مکمل طور پر کتابیں ڈاٹ اردو لائبریری ڈاٹ آرگ پر شفٹ کیا گیا جہاں وہ اب بھی برقرار ہے۔ اس عرصے میں ۲۰۱۳ء میں سیف قاضی نے بزم اردو ڈاٹ نیٹ پورٹل بنایا، اور پھر اپ ڈیٹس اس میں جاری رہیں۔ لیکن کیونکہ وہاں مکمل کتب پوسٹ کی جاتی تھیں، اس لئے ڈاٹا بیس ضخیم ہوتا گیا اور مسائل بڑھتے گئے۔ اب اردو ویب انتظامیہ کی کوششیں کامیاب ہو گئی ہیں اور لائبریری فعال ہو گئی ہے۔ اب دونوں ویب گاہوں کا فارمیٹ یکساں رہے گا، یعنی مکمل کتب، جیسا کہ بزم اردو لائبریری میں پوسٹ کی جاتی تھیں، اب نہیں کی جائیں گی، اور صرف کچھ متن نمونے کے طور پر شامل ہو گا۔ کتابیں دونوں ویب گاہوں پر انہیں تینوں شکلوں میں ڈاؤن لوڈ کے لئے دستیاب کی جائیں گی ۔۔۔ ورڈ (زپ فائل کی صورت)، ای پب اور کنڈل فائلوں کے روپ میں۔

کتابیں مہر نستعلیق فونٹ میں بنائی گئی ہیں، قارئین یہاں سے اسے ڈاؤن لوڈ کر سکتے ہیں:

مہر نستعلیق ویب فونٹ

کاپی رائٹ سے آزاد یا اجازت نامہ کے ساتھ اپنی کتب ان پیج فائل یا یونی کوڈ سادہ ٹیکسٹ فائل /ورڈ فائل کی شکل میں ارسال کی جائیں۔ شکریہ

یہاں کتب ورڈ، ای پب اور کنڈل فائلوں کی شکل میں فراہم کی جاتی ہیں۔ صفحے کا سائز بھی خصوصی طور پر چھوٹا رکھا گیا ہے تاکہ اگر قارئین پرنٹ بھی کرنا چاہیں تو صفحات کو پورٹریٹ موڈ میں کتاب کے دو صفحات ایک ہی کاغذ کے صفحے پر پرنٹ کر سکیں۔


آنکھ بھر اندھیرا ۔۔۔ ابرار احمد

تصنیف حیدر ( ادبی دنیا) کی پیشکش

آنکھ بھر اندھیرا

منتخب نظموں کا برقی مجموعہ

ابرار احمد

ڈاؤن لوڈ کریں

 

ورڈ فائل

ای پب فائل

کنڈل فائل 

 

کتاب کا نمونہ پڑھیں…..

 

آنکھ بھر اندھیرا

 

 

چمکتی ہیں آنکھیں

بہت خوب صورت ہے بچہ

وہ جن بازوؤں میں

مچلتا ہے، لو دے رہے ہیں

چہکنے لگے ہیں پرندے

درختوں میں پتے بھی ہلنے لگے ہیں

کہ لہراتے رنگوں میں

عورت کے اندر سے بہتی ہوئی روشنی میں

دمکنے لگی ہے یہ دنیا

وہ بچہ اسے دیکھے جاتا ہے

ہنستے، ہمکتے ہوئے

اس کی جانب لپکنے کو تیار

عورت بھی کچھ

زیر لب گنگنانے لگی ہے

لجاتے ہوئے

کسی سر خوشی میں

بڑھاتا ہے وہ ہاتھ اپنے

تو بچہ اچانک پلٹتا ہے

اور ماں کے سینے میں چھپتا ہے

عورت سڑک پار کرتی ہے

تیزی سے، گھبرا کے

چلتی چلی جا رہی ہے

ادھر کوئی دیوار گرتی ہے

شاعر کے دل میں

وہیں بیٹھ جاتا ہے

اور جوڑتا ہے یہ منظر

اندھیرے سے بھرتی ہوئی آنکھ میں!

٭٭٭

 

 

ہمارے گھر کوئی آتا نہیں ہے

 

 

دریچے سے لگی آنکھیں، پلٹتی ہیں

پلٹ کر لوٹ آتی ہیں

رسوئی میں اندھیرا ہے

کوئی برتن کہیں بجتا نہیں … مزید پڑھیے